Subscribe:

Wednesday, February 16, 2011

طالبان میں شامل ہونا چاہتا ہوں

ایک ای میل موصول ہوئی ہے
"السلام علیکم ۔۔۔۔۔ بھائی میں طالبان میں شامل ہونا چاہتا ہوں ۔۔۔۔ میں کئی مرتبہ بنوں آیا ہوں لیکن میری ملاقات کسی طالبان کمانڈر سے نہیں ہوئی ۔آپ کوئی بندہ بتا دیں جس کے پاس میں جاؤں ۔۔۔ پہلے ایک ساتھی سے ملاقات رہتی تھی لیکن وہ گرفتار ہو گیا تھا ۔اور اب اس کے پاس جانے کو دل نہیں مانتا۔اللہ آپ کو جزائے خیر دے ۔آپکا بھائی ۔حافظ عبداللہ "

پیارے بھائی عبداللہ ۔۔
میں پہلے تحریر کر چکا ہوں کہ احتیاطی تدابیر کے پیش نظر مجاہدین سفارش کے بغیر کسی مجاہد کو تنظیم میں شامل نہیں کرتے
اگر آپ جہاد میں شرکت کے لیے طالبان یا القاعدہ کو تلاش کر رہے ہیں تو یہ ایک مشکل کام ہوگا ۔
آپ نے مجھ سے کہا ہے کہ میں کسی فرد کا بتا دوں ۔۔۔ میں اس سلسلے میں معذرت چاہتا ہوں ۔۔۔ البتہ اگر آپ اپنے بارے میں تفصیلات بتانے کے لیے تیار ہیں تو ممکن ہے کوئی مجاہد اجر کی خاطر خطرہ کے باوجود آپ کے پاس جانے کے لیے تیار ہو جائے ۔
آپ اپنے بارے میں تفصیلات میرے ای میل ایڈریس پر نہ بھیجیے گا ۔ پہلے آپ ایک سادہ سی ای میل کریں جس میں صرف اپنی عمر اور اپنا شہر لکھ کر ہمیں بھیجیں ۔ میں آگے آپ کی رہنمائی کروں گا ۔ ان شاء اللہ ۔

ایک دوسری ای میل میں تحریر ہے
" عرفان بھائی ۔۔۔۔۔
مجھے بھی کئی مشکلات کا سامنا ہے، اور امید ہے کہ آپ میری رہنمائی کریں گے
۔۔۔ الموحدین سے میں نے کچھ کتابیں ڈاؤن لوڈ کی تھیں پھر مجھے کاغذ کی صورت میں ان کتابوں کی ضرورت محسوس ہوئی تو میں نے انہیں ای میل کی کہ اس ایڈریس پر بھیج دیں ۔لیکن ادارے میں مجھے کچھ رجسٹریشن کے لیے کہا ۔۔۔۔۔ وغیرہ وغیرہ "

میرے بھائی ابو قدامہ
وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ
دعاؤں کا شکریہ
میری سمجھ میں یہ نہیں آیا کہ جب آپ کو کاغذی صورت میں کتاب کی ضرورت محسوس ہوئی تو آپ نے ادارے کو کس ایڈریس پر کتابیں بھیجنے کا کہا ۔بظاہر تو یہی لگتا ہے کہ یہاں ای میل ایڈریس مراد نہیں بلکہ یہ کوئی پوسٹل ایڈریس ہے ۔آپ کے جوابات سے پہلے مزید کچھ سوالات جنم لے رہے ہیں
سوال یہ ہے کہ کیا آپ نے اس بارے میں احتیاط کی تھی کہ پوسٹل ایڈریس کے ذریعے کوئی آپ کو نقصان نہ پہنچاسکے ۔مثلاً کسی مدرسے یا مسجد میں پہنچانی تھیں یا کیا معاملہ تھا ؟؟؟
دوسری بات یہ کہ آپ کو کتنی مقدار میں کتابوں کی ضرورت ہوئی اگر یہ تعداد دس بیس تک ہے تو بہترہوتا ہے کہ کمپیوٹر سے پرنٹ لے لیا جائے ۔کتابیں چھپوانا آسان نہیں ہوتا ، بہت سی کتابیں مجاہدین کمپیوٹر پرنٹر سے پرنٹ کرتے ہیں علاوہ ضروری اور مفید کتابوں کے جنہیں بڑے پیمانے پر نشر کرنا ہو۔
تیسری بات یہ کہ کیا موحدین ویب سائٹ کے علاوہ کوئی پبلی کیشنز کا ادارہ بھی ہے جہاں کتابیں پرنٹ کی جاتی ہیں ۔ میرا خیال ہے کہ یہ لوگ کتابیں پرنٹ نہیں کرواتے ۔آپ کو پہلے اس ادارے سے یہ معلومات لینی چاہیے تھیں کہ کیا یہ لوگ کتابیں انٹرنیٹ پر نشر کرنے کے علاوہ چھاپتے بھی ہیں ۔
آخری بات رجسٹریشن سے متعلق ہے ۔بھائی یہ رجسٹریشن آپ نے نہیں کرنی ۔ یہ لندن کے مفت ڈومین فراہم کرنے والے ادارہ ڈاٹ ٹی کے کی طرف سے موصول ہوئی تھی ۔ اور یہ رجسٹریشن آپ نے نہیں کروانی موحدین نے کروانی ہے ۔ محسوس یہ ہوتا ہے کہ ڈاٹ ٹی کے کا ادارہ مفت ڈومین کی سروس تو دیتا ہے لیکن ای میل کا استعمال مفت کرنا ممکن نہیں ۔ یا پھر موحدین کی ویب سائٹ میں ای میل کی سیٹنگ کچھ خراب ہوگئی ہے ۔اس لیے انہیں ای میل کرنا ممکن نہیں ۔تکنیکی معلومات چاہتے ہوں تو کچھ تفصیلات ضرور بتایا کریں ۔ مثلاً آپ نے یہ ذکر کیا ہی نہیں کہ کس ای میل پر رابطہ کیا تھا اور یہ جواب کس کی طرف سے آیا تاکہ میں بھی انہیں ای میل کر کے چیک کرلیتا۔
والسلام



0 تبصرے:

تبصرہ کریں

آپ کے مفید مشوروں اور تجاویز کی ضرورت ہے
آپ اپنی شکایات سے بھی آگاہ کر سکتے ہیں
بحثوں میں مخالفت بھی کر سکتے ہیں لیکن حدود و قیود کے ساتھ
جزاک اللہ