Subscribe:

Saturday, June 18, 2011

مقدس گائے اور مقدس بیل


۱۹ جون ۲۰۱۱

سلیم شہزاد قتل کیس میں شکوک و شبہات پھیلانے کے لیے خفیہ ایجنسیاں سرگرم ہو گئیں ہیں ۔ یہ اطلاعات موصول ہوئیں کہ خفیہ اداروں نے سلیم شہزاد کے موبائل کا ڈیٹا غائب کردیا ہے ۔جب سلیم شہزاد قتل کیس کے سلسلے میں پیش رفت کرنے کے لیے ، ان کے موبائل نیٹ ورک سے رابطہ کیا گیا تو معلوم ہوا کہ کسی نامعلوم دباؤ کی بنا پر ان کا موبائل ڈیٹا کمپیوٹر سسٹم سے پہلے ہی غائب کردیا گیا ہے ۔ واللہ المستعان ۔۔۔
اس خبر کے مشہور ہونے کے بعد آئی ایس آئی نے کھسیانی بلی کی طرح کھمبا نوچتے ہوئے یہ اعلان کیا کہ آئی ایس آئی خود بھی سلیم شہزاد کے قتل کے تحقیق کرے گی ، اور فکر کرنے کی کوئی بات نہیں اگر موبائل سسٹم سے غائب ہو تو کیا سلیم شہزاد کا کالرز ڈیٹا ہمارے پاس محفوظ ہے ۔  اب کون اس سے پوچھے کہ اب تک آئی ایس آئی اس کالرز ڈیٹا میں کتنی ترمیم کر چکی ہو  ؟؟؟؟

جنوبی اور شمالی وزیرستان میں مجاہدین نے ناپاک فوج کے چوکیوں پر حملے کرکے متعدد مرتدین کو ہلاک کو دیا ۔اس کے جواب میں ناپاک فوج نے اپنی دردندگی کا ثبوت دیتے ہوئے شہری آبادی پر گولے پھینکے  جس کے نتیجے میں کئی مسلمان شہری شہید ہوگئے ۔شمالی وزیرستان میں مجاہدین کے حملوں کے بعد مرتد افواج نے قبائلی عوام پر اندھا دھن  فائرنگ شروع کردی اس فائرنگ کے نتیجے میں دو خواتین ہلاک جب کہ آٹھ قبائلی شہری زخمی ہوگئے ۔ جب مرتدین کو معلوم ہوا کہ زخمی قبائلیوں کو ہسپتال لے جایا گیا ہے تو ان ناپاک فوجیوں نے ہسپتال پر بھی مارٹر گولے برسائے ۔اسی طرح جنوبی وزیرستان میں فوج کی چوکی پر مجاہدین کے کامیاب حملے کے بعدفوجیوں نے عام آبادی پر بھاری ہتھیاروں سے حملہ کر کے پانچ قبائلی شہریوں کو شہید کر دیا ۔اگلے دن کے اخبارات نے جو دجالی میڈیا کے زیر اثر ہیں ، فوج کے ان مظالم پر پردہ ڈال کر اپنے گھناؤنے کردار پر مزید گواہی ثبت کردی ۔واللہ المستعان علینا

پنجگور میں ایف سی کے قافلے پر ریمورٹ کنٹرول بم سے حملہ کیا گیا ۔ اس حملے میں ایف سی کے متعدد اہلکار مردار ہوگئے ۔ مردار ہونے والے اہلکاروں کی صحیح تعداد معلوم نہ ہوسکی کیونکہ دجالی میڈیا کے ذریعے خبروں کو توڑ مروڑ کر پیش کرنے کا سلسلہ ہنوز جاری ہے ۔


1 تبصرے:

Tausif Hindustani said...

Allah mujahidon ko faulad bana de aur unki madad apne muqarrab fairshton ke zarie kar , aameen ,murtad w kaifron ko hidayat de ya unhe zalil kar de , aameen

تبصرہ کریں

آپ کے مفید مشوروں اور تجاویز کی ضرورت ہے
آپ اپنی شکایات سے بھی آگاہ کر سکتے ہیں
بحثوں میں مخالفت بھی کر سکتے ہیں لیکن حدود و قیود کے ساتھ
جزاک اللہ