Subscribe:

Saturday, June 18, 2011

خاتون کی ویڈیو کے بارے میں



السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ
عرفان بھائی اللہ سبحانہ وتعالیٰ سے آپکی خیریت و حفاظت کی لئے دعا گو ہوں۔
عرفان بھائی میں آپ کامجاہد  بھائی کراچی سے ہوں ۔عرفان بھائی میں نے آپ سے ایک مسئلہ پوچھنا ہیں مجھے یہ تو نہیں کہ آپ مفتی ہیں یا نہیں لیکن پھر بھی تعلق تو علماء سے ضرور ہوگا کیو کہ آپکی پوسٹ سے پتا چلتا ہیں کہ آپ الحمد اللہ دین کا اچھا خاصا فہم رکھتے ہیں اور تعصب و ضد سے ہٹ کر آپ کا کام ہیں اللہ قبول فرمائے اور اللہ مجھے بھی آپکی طرح شرح صدر نصیب فرمائے۔آمین ثم آمین۔
اب آتا ہوں مسئلہ کی طرف۔عرفان بھائی اگر میں چاہتا تو یہ دار الفتاء سے بھی پوچھ سکتا تھا لیکن وہ وہاں تو حکمت کا راج ہیں کیوکہ ان کو ہر معاملے میں احتیاط کرنا پڑتی ہیں اس لئے مناسب ہیں وہ میرے مسئلے کا جواب نہ دے بلکہ قوی امید ہیں لیکن مجاہد تو سراپا حق ہوتا ہیں اور حکمت نہیں بلکہ حق کی بات کرتا ہیں کیوکہ اس کا تو یہ عقیدہ ہوتا ہیں کہ گردن تو ایسے بھی کٹنی ہیں کیوں نہ حق کی خاطر کٹوالی جائے۔۔خیر۔۔
عرفان بھائی جیسا کہ لوگوں کے ذہنوں کے لئے آج میڈیا کی ضرورت سے کوئی انکار نہیں کرسکتا اور خاص کر انٹرنیٹ سے کیوکہ اس کے ذریعے جہاد و قتال کی دعوت نہایت عمدہ اور آسان ہیں لیکن اس پر کام کرنے والے تو الحمد اللہ ہیں اور کررہے ہیں اللہ قبول فرمائے ۔۔مگر عرفان بھائی پرسوں ایک ویڈیو دیکھ رہا تھا یوٹیوب میں کہ ایک چینل پر وزٹ کیا جو کہ عورتوں کے لئے بنایا گیا تھا تاکہ اس کے ذریعے بہنوں کو دعوت دی جائے اور اس میں خاتون کی ایک ویڈیو بھی ہیں جس میں وہ دعوت دے رہی ہیں برقہ اوڑھا ہوا ہیں اور آنکھیں نکالی ہوئی ہیں اور کافی لمبا بیان کیا ہیں اس نے اور باقی ویڈیوز میں اس نے خالی اپنی آواز ریکارڈ کروائی ہیں اس میں بھی بیان ہیں جو کہ جہاد و قتال کے موضع پر ہیں۔۔تو بھائی عورت کا اس طرح سرعام بیان کرنا خواہ وہ حق پر ہی بات کیوں نہ ہو کیا یہ جائز ہیں یا نہیں ۔کیا عورت کی آواز کسی غیر محرم کو سنانا جائز ہیں یا نہیں ۔۔اس چینل پر مردو عورت دونوں سنتے ہیں اور دیکھتے ہیں کیوں کہ یوٹیوب پر تو سب دیکھ سکتے ہیں۔
میں چاہوں تو اسکا لنک بھی دے دوں آپکو لیکن پھر بات تعصب تک جا پہنچے گی ۔
بھائی میرے اس مسئلے کا ضرور جواب دینا اگر آپکا جواب مجھے مل گیا تو میں نہایت خوش ہونگا لیکن اگر نہیں ملا تو پھر تو خواں مخواں دل آزاری ہوگی میری۔۔۔
احب المجاھدین ولست منھم۔
والسلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ
::::::
وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ
بھائی  میں نے آپ سے عرض کیا تھا کہ میں آپ کو وہی کچھ بتاؤں گا جو کچھ میں نے اپنے اساتذہ سے سیکھا ہے اورمیں اپنی رائے پیش کر نے کے قابل بھی نہیں ۔
آپ نے خاتون کی جس ویڈیو کا ذکر کیا ہے ، اس پر ہم سب کو تشویش ہے ، اور ہم سمجھتے ہیں کہ اس قسم کی ویڈیو کی کوئی ضرورت نہیں ہے ۔کیوں کہ اس کے نتیجے میں فتنوں کے پھیلنے کا امکان زیادہ ہے ۔
اب میں آپ کو اس مسئلہ کے بارے میں بھی بتا دوں جو نا محرم عورت کی آواز کے پردے کے بارےمیں ہے ۔
شیخ انوار العولقی حفظہ اللہ عورت کی آواز کے پردے کے بارے میں فرماتے ہیں : کہ اسلام ایک متوازن دین ہے ، اور اسلام کے ہر حکم میں توازن یعنی عدل کو برقرار رکھا گیا ہے ۔ جب بھی کوئی شرعی حکم لگایا جاتا ہے تو علماء کی کوشش ہوتی ہے کہ افراط و تفریط سے بچا جائے ، یعنی نہ تو اتنی نرم رائے اختیار کی جائے جس سے گمراہی کا خطرہ ہو اور نہ ہی اتنا متشدد رویہ اختیار کیا جائے جس سے حکم کی مصلحت بھی فوت ہوجائے ۔ شیخ انوار العولقی حفظہ اللہ فرماتے ہیں کہ جو علماء یہ کہتے ہیں کہ عورت کی آواز کا بھی پردہ ہے ۔ وہ زیادہ سخت موقف اپناتے ہیں ۔ اور اس موقف کو اپنانے کے نتیجے میں بعض اوقات کچھ مصلحتیں بھی فوت ہوجاتی ہیں۔شیخ انوار کا کہنا ہے دور صحابہ میں صحابہ اور صحابیات کا کسی ضرورت کی وجہ سے آپس میں گفتگو کرنا ، اور ملاقات کے لیے ایک سے دوسرے کے پاس جانا اتنے تواتر سے ثابت ہے کہ اس کا انکار ممکن ہی نہیں ۔ اور یہ ضرورت صرف دینی ہی نہیں بلکہ بعض اوقات معاشرتی ضرورت کی بنا پر بھی وہ ایک دوسرے سے گفتگو کرتے تھے ۔ایک انسانی معاشرے میں بسا اوقات ایسی ضرورت پیدا ہوجاتی ہے کہ عورت یا مرد کو آپس میں گفتگو کرنی پڑ جاتی ہے ۔ ہاں یہ ضروری ہے کہ یہ گفتگو یا ملاقات  شریعت کے بقیہ احکامات کو سامنے رکھتے ہوئے کی جائے ۔ مثلاً پردے کے پیچھے سے ، یا شرعی پردے کے ساتھ ، اور غیر ضروری گفتگو سے مکمل پرہیز ، اور صرف اتنی گفتگو جتنی ضروری ہو ، اور تنہا ئی میں ملاقات کی گنجائش نہیں ، اسی طرح  مرد و عورت کی خفیہ ملاقات کی بھی شریعت میں گنجائش نہیں ہے ۔

جہاں تک ان خاتون کی اس ویڈیو کا سوا ل ہے وہ ہمارے نزدیک درست نہیں ہے ، چاہے وہ پردے کے پیچھے ہی سے کیوں نہ ہو ، بات یہ ہے کہ جہاد کے بارے میں وہ جو کچھ کہنا چاہتی ہیں ان سے بہتر انداز سے کہنے والے پہلے ہی کہتے آرہے ہیں ۔ ایسے میں ان خاتون کو اپنی ویڈیو بنانے کی کیا ضرورت ہے اور کیا اب قتال کی دعوت دینے والے مرد موجود نہیں رہے  یا ان خاتون کا دین کا علم ہمارے مردوں سے زیادہ ہے ۔ وغیرہ وغیرہ ۔۔۔ اگر ان کا علم ہمارے مرد حضرات سے زیادہ ہوتا تو بھی گنجائش نکل سکتی  تھی ۔
اگر اس کے علاوہ کوئی اور مصلحت ہے تو ان خاتون سے پوچھیں ۔۔۔ ہو سکتا ہے ان کی نیت یہ ہو کہ ان کی ویڈیو کو زیادہ پذیرائی ملے گی اور بڑی تعداد میں نوجوان نسل اسے دیکھے گی اور اس کا اثر قبول کرے گی ،یہ بھی ہوسکتا ہے کہ  اللہ تعالیٰ ان کی نیت کے سبب ان کے اس عمل کو قبول بھی فرمالیں ۔۔۔ اگر یہی بات ہے تو پھر ہمیں شیوخ سے رائے لینی ہوگی ۔۔۔ وہ کیا کہتے ہیں
بہر حال اس کے علاوہ یہ بات سمجھ نہیں آتی کہ اس کی کیا ضرورت ہے ۔۔۔ ہاں اگر وہ کوئی فدائی حملہ کرنے جا رہی ہوں اور کوئی وصیت ریکارڈ کروانا چاہیں تو بعض مصلحتوں کی بنا پر یہ احسن عمل ہوگا اور ہم اس کی گنجائش نکالتے ہیں ۔۔۔
واللہ اعلم
غزوہ ہند میں شریک آپ کا بھائی
عرفان بلوچ

10 تبصرے:

Behna Ji said...

Assalamoalykum

isi topic say related question hay k owraton ka internet pr face book, groups owr blogs main disscussions main hissa layna owr apny comments karna kaisa hay?kunke wo na mehram mardon say interact karti hain agarcha ye sirf text kay zaryay hota hay. owr mard na unki awaz sun sakty hain owr na daikh sakty hain.

shaikh anwar al awlaki mery favourite scholar bhi hain owr main unki website ki member bhi thee... once upon a time...Allah unko apni hifzo aman main rakhy Ameen.

Anonymous said...

میں اس سے اختلاف کرتا ہوں اگر وہ ہماری بہن دعوتی مقاصد کے لیے ایسا کر رہی ہے تو ٹھیک ہے جیسا کے جامعہ حفضہ کی طالبات نے کیا لیکن ایک بات ضرور ہے اس کو خواتین کے لیے ہی مختص ہونا چاہیے ۔واللہ عالم

Anonymous said...

بھائی جان آپ کیوں اختلاف رکھ رہے ہیں سائل نے بھی یہی کہا ہیں کہ اس سے نامحرم بھی انکو دیکھتے ہیں تو ظاہر ہیں کہ خواتین کے لئے مختص نہیں ہیں اور پھر یوٹیوب کہاں خواتین کے لئے مختص ہوسکتا ہیں اگر صرف خواتین کے لئے ہوتا تو بات ہیں ختم ہوجاتی لیکن اس میں شریعت کا مسئلہ ہے اور کا حکم ٹوٹ رہا ہیں۔یہ ڈاکٹر فرحت ہاشمی کی پیروکار ہیں جو چند مہینوں میں دین کی داعی بن جاتی ہیں اور چند مہینے کے کورس سے درس قرآن اور درس بخاری شریف اور دیگر حدیث دیتی ہیں۔۔
باقی نیت کا تو اللہ کو پتا ہیں ہوسکتا ہیں کہ انکی نیت اپنی مشھوری کی ہو کیوں کہ جہاد آج امت کا گرما گرم مسئلہ ہیں اور جب آواز لگاؤ تو الحمداللہ اچھی خاصی مقبولیت ملتی ہیں لیکن اس مقبولیت کے اہل صرف وہ ہیں جو اپنی جانیں دے رہے ہیں باقی لوگ اپنے آپ کو جہاد کے نام پر مشھور کروائے تو یہ بہت برا ہوگا۔۔۔
الامان والحفیظ۔
لنک یہ ہیں دیکھ سکتے ہو
http://www.youtube.com/watch?v=uzJOsYiPBw8&feature=related

ابو جمال said...

گمنام بھائی آپ نے اپنے تبصرے میں کچھ نامناسب جملے بھی کہے ہیں
آپ ان خاتون کی نیت پر شک کر رہے ہیں کہ وہ مشہوری چاہتی ہیں ، اسلام ہمیں اس کی اجازت نہیں دیتا کہ ہم کسی کی نیت پر شک کریں کیوں کہ ہم کسی کا دل چیر کر نہیں دیکھ سکتے ، بس یہی کہیں کہ ان کے اس کام پر ہمیں اعتراض ہے اور وہ ہم نے ریکارڈ کروا دیا ہے

Anonymous said...

Assalam Alikum
Mujy ess Gumnaam ki soch par harit aur dukh ho raha ha k ess trha k loog bhi haan jou karty kuch nahi bus dusroon par tanz karty haan mein na kudh uss behn c rabta kia aur un c pocha kia app dr.Farhat ki taqleed karti haan tu unou na kaha mein kabi karti thi lekin ab nahi ab mera unka sath koi taluq nahi ha

aur unki naik khuwahish ha k wo jihad Fi Sabillilah mein hisa laan aur hum sirf un par tanz kar sakty haan assa nahi hona chahy

Anonymous said...

آپکی پوسٹ پر اس گمنام بھائی کا تبصرہ
Assalam Alikum
Mujy ess Gumnaam ki soch par harit aur dukh ho raha ha k ess trha k loog bhi haan jou karty kuch nahi bus dusroon par tanz karty haan mein na kudh uss behn c rabta kia aur un c pocha kia app dr.Farhat ki taqleed karti haan tu unou na kaha mein kabi karti thi lekin ab nahi ab mera unka sath koi taluq nahi ha

aur unki naik khuwahish ha k wo jihad Fi Sabillilah mein hisa laan aur hum sirf un par tanz kar sakty haan assa nahi hona chahy

بھائی آپ اپنے دل پر ہاتھ رکھے اور بتائے کیا آپ یہ گوارا کرے گے کہ آپکی اپنی بہن اس طرح سے یوٹیوب پر جہاد کا درس دے۔۔۔
یار غیرت بھی کوئی چیز ہوتی ہیں یہ عورت ہیں کوئی مرد نہیں اگر مرد ہوتا تو اعتراض کس بات کا۔۔
میں دین کے لئے کچھ نہیں کرتا یہ بھی آپکا گمان ہیں اور مجھ پر بہتان ہیں
اللہ ہدایت دے آپکو
کیا مرد کم پڑگئے۔۔۔۔۔۔۔

Anonymous said...

"کیا مرد کم پڑگئے۔۔۔۔۔۔۔"
انتہائی افسوس سے کہنا پڑ رہا ہے کہ آپکا یہ جملہ آپکی تاریخ اسلامی سے ناواقفیت کی دلیل ہے۔ یا پھر کسی تقلید میں شاید آپ نے یہ کہا اکثر جماعت الدعوہ والے ایسے کہتے ہیں جامعہ حفصہ والی بہنوں کے بارے میں

Anonymous said...

جامعہ حفصہ والی بات نہ کرو ان پر ایسا وقت تھا کہ شاید فرشتوں کو بھی نہ پتے چلے کے کیا کرنا چاہیے میرے خیال میں تاریخ میں ایسا مشکل دور کہیں سامنے نہیں آیا ہوگا جیسا کہ ان پر ظلم ہوا اس کی سزا پوری قوم سے لی جائے گی سب اس میں اجتماعی گناہ گار ہیں۔
جماعت الدعوة کی میں نے بات نہیں کی اور نہ ہی میں نے اشارہ کیا ان کی طرف کیوکہ میں انکو نہیں جانتا۔
مگر گھر بیٹھ کر اس طرح عورت کا درس دینا میں اسے ناجائز و حرام سمجھتا ہوں اور اس بہن کے لئے اللہ سے سیدھے راستے کی دعا کرتا ہوں اور خاص کر اپنے لئے بھی۔
اللہ جزائے خیر دے عرفان بھائی کو اور اسی طرح حق بولنے اور لکھنے کی توفیق عطا فرمائے اور تمام شریر لوگوں سے انکی حفاظت فرمائے۔

Anonymous said...

جماعت الدعوہ والوں کا تو پتہ نہیں لیکن میں تو یہی کہتا ہوں کہ سانحہ لال مسجد کی ذمہ داری ہمارے مدارس میں ذیر تعلیم ہر طالبعلم پر عائد ہوتی ہے۔۔۔ تف ہے ہماری غیرت دینی پر۔۔۔ لعنت ہے ہمارے علم پر۔۔

Anonymous said...

Assalam O Alaikum Bhai

Bhai Lal Masjid Or Jamia Hafsa ka jahan tak muamla ha to ma un dino ooper tha or ALHAMDULILLAH madaris k buhat se Talib e Ilm sirf is Waqia ki waja se ribat k liay niklay...
Ma ne khud 1 jamia k tulba ko nikalte hue dekha ha....
or buhat se madaris se ab b nikal rahe hain..
jin ka yahan tazkara munasib nai
Nabi S.A.W ne farmaya jis ka mafhoom ha k momin La yani ko chor deta ha...
pas is la yani behes ka koi faida nai
Kam par tawajuh dain

تبصرہ کریں

آپ کے مفید مشوروں اور تجاویز کی ضرورت ہے
آپ اپنی شکایات سے بھی آگاہ کر سکتے ہیں
بحثوں میں مخالفت بھی کر سکتے ہیں لیکن حدود و قیود کے ساتھ
جزاک اللہ