Subscribe:

Monday, December 26, 2011

بنوں میں کار بم شہیدی حملہ



۲۵ دسمبر ۲۰۱۱
بنوں
بنوں سے پانچ کلو میٹر دور میران شاہ روڈ پر واقع کرم پل کے نزدیک ایف سی  کی ٹوچی اسکاؤٹس لائن کے قلعے پر شہیدی کار حملہ ہوا جس کے نتیجے میں قلعے کا عقبی حصہ منہدم ہو گیا ۔اخباری خبر کے مطابق نو (۹) مرتدین ہلاک ہو گئے ۔یہ حملہ گذشتہ روز ہونے والے حملے کے بعد دو روز میں مرتدین کے اوپر ہونے والا دوسرا مسلسل شہیدی حملہ تھا ۔
تحریک طالبان کے ترجمان احسان اللہ احسان نے غیر ملکی خبر رساں ایجنسیوں کو فون کر کے ان دونوں  مبارک حملوں کی ذمہ داری قبول کرلی  ہے ۔

بے شک تمام شکر اور حمد کے لائق وہی ہستی ہے جس نے اپنے مومن بندوں پر یہ فتح اتاری

1 تبصرے:

راشد خاکی said...

عرفان بھائی مجھے یہ مسئلہ پہنچا ہیں کہ جو جنگ میدان سے پیٹ پھیر کر بھاگ جائے اسلام میں اسے بہت برا سمجھا جاتا ہیں اور اسلام اسکی اجازت نہیں دیتا۔
لیکن طالبان جب آرمی والوں پر گھات لگا کر حملہ کرتے ہیں تو پھر تھوڑی سی مزاحمت کرکے بھاگ جاتے ہیں۔
کچھ بار تو آرمی والوں کو طیاروں کی سپورٹ پوجاتی ہیں چلو پھر تو مانا جاتا ہیں کہ چلو طیارے آگئے۔لیکن کافی دفعہ ایسا ہوا ہیں کہ آئے چند گولیاں اور راکٹ فائر کئے اور پہاڑوں میں چھپ گئے اور کبھی عام لوگوں کے گھروں میں جاکر عورتوں میں جاکر پناہ لے جاتے ہیں برائے کرم اسکا جواب دیجیئے۔
RASHID KHAKI

تبصرہ کریں

آپ کے مفید مشوروں اور تجاویز کی ضرورت ہے
آپ اپنی شکایات سے بھی آگاہ کر سکتے ہیں
بحثوں میں مخالفت بھی کر سکتے ہیں لیکن حدود و قیود کے ساتھ
جزاک اللہ