Subscribe:

Saturday, January 7, 2012

استشہادی نے پولیس بس اڑا دی


دمشق
۶ جنوری ۲۰۱۲

اہل ایمان کو مبارک ہو ۔۔۔۔ شام میں القاعدہ کا ایک اور حملہ  
جمعہ کے روز  شام کے دارالحکومت دمشق میں پولیس ہیڈ کوارٹر کے نزدیک ہمارے ایک استشہادی بھائی نے  پولیس اہلکاروں سے بھری ایک بس پر شہیدی حملہ کیا جس کے نتیجے میں پچیس پولیس اہلکار اور مرتد حکومت کے حامی ہلاک ہوگئے ۔ یہ  مبارک استشہادی حملہ ، ۲۴ دسمبر ۲۰۱۱کے دو شہیدی کار حملوں کے بعد دمشق میں تیسری شہیدی کارروائی ہے جس کے بعد شام میں القاعدہ کی طاقت وراور منظم جتھہ بندی کی ایک نئی لہر دنیا کے سامنے متعارف ہوئی ۔۔۔۔
وللہ الحمد والمنۃ ۔۔۔۔
صرف دو ہفتے قبل انٹیلی جنس کی دو عمارتوں کو کامیابی سے نشانہ بنانے کے بعد پولیس کے ایک ہیڈ کوارٹر  کے باہر پولیس بس ہر حملہ ، اس علاقے میں ہوا جسے حکومت کے حامیوں کا گڑھ سمجھا جاتا ہے ۔۔۔ اکثر تجزیہ نگار اس بات پر یقین رکھتے ہیں کہ ان حملوں  میں جس طرح سے مہارت ، وقت اور اہداف کا تعین  کیا گیا ہے وہ القاعدہ کا خاصہ ہے ۔۔۔۔

دو ہفتے قبل ہونے والے حملوں کے بعد حکومت کا کہناتھا کہ حملوں کے پیچھے القاعدہ یا حکومت مخالف جنگجو ملوث ہیں ۔ جب کہ حکومت مخالف جنگجو ان حملوں میں القاعدہ کی مورد الزام ٹھہرانے کے لیے تیار نہیں تھے ۔ اس تازہ حملے کے بعد کم از کم حکومت اس بات پر یقین رکھنے لگی ہے کہ یہ حملے شام میں القاعدہ کی موجودگی کو ثابت کر رہی ہے ۔
جمعہ کی دن ہونے والی شہیدی کارروائی کے بعد مخالف جنگجووں کے رہنما کرنل ریاض الاسد نے الجزیرہ ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے ان حملوں میں ملوث ہونے کی تردید کر دی ہے ۔ ان کا کہنا ہے کہ ہماری تنظیم یعنی  " آزاد شامی لشکر  " اتنے بڑے پیمانے پر بہترین  اور طاقت ور  بارودی دھماکوں کا تجربہ اور صلاحیت نہیں رکھتی ۔۔۔ ریاض الاسد نے ایک مرتبہ پھر اسے حکومت کی سازش قرار دیا ہے ۔۔۔  جب کہ ہمارا خیال ہے کہ القاعدہ ، کی حکمت عملی یہی ہے کہ ابتدا میں خاموش رہ کر اس وقت کا زیادہ سے زیادہ فائدہ سمیٹ لیا جائے ۔۔۔۔
اللہ سبحانہ وتعالیٰ   !!!  ابو عبیدہ ابن الجراح رضی اللہ عنہ کی زمین میں  مجاہد بھائیوں کی بہترین نصرت اور مدد فرمائیں ۔۔۔۔
آمین ۔۔۔۔

مجاہدین کا نشانہ بننے والی پولیس بس


پولیس بس کا اندرونی منظر 



دیکھیے پچھلی پوسٹ
شام میں القاعدہ کی نئی لہر


11 تبصرے:

Behna Ji said...

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته
الحمدلللہ ،خس کم جہاں پاک ! الله کرے عدو کا زیاں اور زیادہ

افسوس ہے ان اہلکاروں پر جو حق کے خلاف لڑتے ہوے باطل کے لئے مارے گۓ.
اور آفریں ہے ان استشہادی لوگوں کے لئے جنکا ایمان اور یقین اتنا بلند ہے کہ وہ اتنی آسانی سی اپنی سب سی پیاری چیز یعنی جان الله کے راستے میں لٹا دیتے ہیں .الله سے ملنے کا شوق ، جنّت کی آرزو،زمین پر اسلام کا غلبہ اور اسلام دشمنوں سے عداوت ہی انکے اس عمل کا محرک ہے .
الله ہم سب کو حق پر قائم رکھے، مجاہدین کو ہر محاذ پر کامیابی دے اور اسلام کو غلبہ عطا کرے آمین

Anonymous said...

اللہ اکبر
ماشاء اللہ زبرست

Anonymous said...

ALLAH HU AKBAR.......ALLAH HU AKBAR....ALLAH HU AKABR..

RASHID KHAKHI said...

irfan bhai
mohtat rahiye
ap is faltu kaam ko chor dijiye or apnay ap per reham kahiye
humnay kafi internet bloggers pakray hai kuch to waqihi mujrim thay magar kuch to sada say log thay magar jabza jihad ki waja say wo media ka kaam karrahain thay

khair
yeh dekhaiye.


دہشتگرد تنظیموں کا انٹرنیٹ بلاگزپر ایک دوسرے سے رابطوں کا انکشاف
Last Modified February 20, 2012 10:46



کراچی میں 9 دہشت گرد تنظیموں کے انٹرنیٹ پر ایک دوسرے سے رابطوں کا انکشاف ہوا ہے، پکڑے گئے دو بلاگز پر کراچی میں حساس اداروں پر حملوں اور وکلا ءکے قتل کے اعتراف بھی موجود ہیں۔ذرائع کے مطابق 9 دہشت گرد تنظیموں کے انٹرنیٹ پر ایک دوسرے سے رابطوں کا انکشاف ہوا ہے۔ بلاگز پر کراچی میں حساس اداروں پر حملوں اور وکلا کے قتل کا اعتراف بھی موجود ہے۔ ذرائع کے مطابق رینجرز کے ہاتھوں ہلاک ہونے والے دہشتگرد معید ’’باب الاسلام‘‘ نامی بلاگ کا خالق تھا۔ ذرائع کے مطابق بلاگز پر انتہائی حساس مواد موجود تھا۔ انویسٹی گیشن ٹیم نے کہا ہے کی آپریٹرز کیخلاف تحقیقات کر رہے ہیں۔

APKA BHAI
RASHID KHAKI

ابو جمال said...

bhai kahan say agaye

tum islam k dushman ho or islam ka dushman bhai kahan say hogaya

RASHID KHAKI said...

Jamal bhai
Wallah hum islam k Dushman nahi bus chand Batkay huway logo ko raye rast per lanay walay hai

Afghan Taliban Hukumat say sullah kar rahain hai magar ap logo ko kya hogayya hai k hukumat say sulla nahi karrahin.

حجاج بن یوسف نے کتنے زیادہ صحابہ کرام کو شہید کیا مگر کسی نے اسکو مرتد نہیں کہا البتہ چند علماء نے اس پر لعنت بھیجی ہیں اور ظالم لکھا ہیں لیکن کسی نے اسکو کافر نہیں لکھا ہے۔
تم لوگ کیا صحابہ کرام سے بھی زیادہ معزز ہو کہ جو تمھیں قتل کرے وہ مرتد ہوجاتا ہے یہ کونسی منطق ہیں تمھارا مخالف ضرور ہوسکتا ہیں لیکن مرتد نہیں ہوسکتا۔البتہ جو فوجی دل سے اسلام کا،رسول اللہ ﷺ کی سنتوں کا اور اسلامی شعائر کا دشمن ہو یا اسکی تحقیر کرتا ہو اسکو مرتد کا فتوی دیا جاسکتا ہیں مگر تم لوگ ایسی مطلق تکفیر کرتے ہیں کہ اللہ ہی حافظ ہیں۔یہ مطلق تکفیر کی اجازت کس عالم نے دی ہیں کہ ایک قوم کی سب فوج،سیاست دان و دیگر کو مطلق کافر کہا جائے۔
مجھے یہ ثابت کرکے دکھادے کہ مطلق ارتداد کا فتوی لگا جاسکتا ہیں یا نہیں۔
حجاج بن یوسف کو بھی مرتد کہیں کیوکہ اس نے صحابہ کرام کو شہید کیا تھا اور تو اور حضرت عبداللہ بن زبیر رضی اللہ عنہ کو حدود حرم میں شہید کیا اور منجینیق سے خانہ کعبہ کو شہید کیا اور بعد از جنگ پھر تعمیر کرایا مگر اتبا بڑا ظالم پھر بھی مرتد نہیں کہلایا یہ کونسی سیاست تھی۔۔۔کیا آپ لوگ اس وقت کے علماء سے بھی ہوشیار ہوگئے ہو یا پھر یہ کہہ دو کہ ہم سمجھتے ہیں اور دیگر پچھلے جو گذرے ہیں وہ نہیں سمجھتے۔؟؟؟؟
اگر میری پوسٹ کو اس بلاگ پر نشر نہیں کیا گیا اور میرے اس اشکال کا جواب نہیں دیا گیا تو پھر میں سمجھونگا کہ آپ فالتو لوگ ہو۔

link yeh hai jo meinay uper khabar post ki hai.

http://www.ahwaal.com/index.php?option=com_content&view=article&id=9290%3A2012-02-20-13-33-14&catid=24%3Atherikeazadi&Itemid=41&lang=ur

عرفان بلوچ said...

بڑا سادہ اور آسان سا جواب ہے

ہم بھی حجاج بن یوسف کو مرتد نہیں کہتے کیوں کہ وہ شریعت کی رو سے کافر یا مرتد تھا بھی نہیں

ناپاک فوج اور حجاج میں فرق ہے کافروں کے ساتھ دوستی کرنے کا


اصل میں کفر یا ارتداد کا حکم اس وقت لگایا جاتا ہے جب ایک مسلمان گروہ دوسرے مسلمان گروہ کے خلاف کفار کی مدد کرے اور اس بارے میں علماء کا اختلاف نہیں ہے

تم لوگ اس لیے کافر اور مرتد ہو کیوں کہ تم لوگ مسلمانوں کے خلاف کفار کے مدد گار بن گئے ہو

ہمیں اصلاح کی دعوت دیتے ہو حالانکہ تمہیں اپنی اصلاح کی فکر ہونی چاہیے

کفار سے دوستی کر کے تم لوگ جہنم کے راستے پر چل رہے ہو اور کسی بھی وقت اس میں گر سکتے ہو

ہوش کرلو ۔۔ موت سے پہلے سنبھل جاؤ اور ہمارے مسلمان بھائی بن جاؤ

صیف الکفر با لطا غوت said...

Allahu Akbar Kabeera!

Is Tehreer ko to pakistan ki sari awam me taqseem ker dena chahiye, ho sakta he, jo log abhi bhi dolat, taqat, gharoor or nafs parasti ki zulmat me gire huwe he, kuch ki aankhen khul jayen.

Mera sirf aik sawal he or bus!

Agar namaz na perhne wala
namaz ko mukammal tor pe tark kerne wala,
namaz ka inkar kerne wala
kisi haram ko halal karar dene wala, ya halal ko haram kehne wala,
quran ki aayat ka sareeh inkar kerne wala,
or aik lambi list he kartooton ki.

kya ye sub kam kerte huwe, koi shaks ye guman, ghumand or dawa ker sakta he ke wo musalman hai, Kyun? Iss liye ke woh zaban se Kalimah parhta he!

Kya zaban se Kalimah ada kerna, kisi shaks ke Amalan Kufr al Akbar / Shirk al Akbar pe bhari he?

Or in sub ke hote huwe, un ke bare me kya khayal he jo "Kufr bit Taghoot" ke bajaye, "Eaman bit Taghoot" ke dayee he, us ke liye larhte hen, jeete hen or marte hen?


Jin ke liye Quran ki aayat, Mohammad Sallallahu alaehi wa-sallam ki Sunnah qabil ehteram nahi or woh angrez ke dildar hen, un ke liye gorey ka Qol laya hun.

Action speaks louder than words, but not nearly as often. (Mark Twain)

http://sword-of-kufr-bit-taghoot.blogspot.com/2011/09/fatwah-for-dollar-20.html

صیف الکفر با لطا غوت said...

Agar ye log Saleebiyon ka saath chorh bhi deyn phir bhi ye jung khatam nahi ho gee.

Kyun ke in ke Kufr al Akbar (Nawaqid ul Eamaan) ki ye sirf aik wajah nahi hai.

In ka Siyaasi Nizaam Kafirana.

In ka Adaalti Nizaam Kafirana.

In ka Maashi Nizaam Soodi (Allah or Allah ke Nabi Sall Allahu alaehi wa Sallam) ke saath Jung wala)

In ka Iblaghi nizaam Fawahish se bharpoor.

aur ye khud jin ki chakri kerte hain, aur jin ke pehre dar hayn, un ki zaban or harkat Mushrikana, Munafiqat se bharpoor.

Agar ye sub kaam chorh dete hain, to ye hamare bhai hain..

Wallah werna in ke liye esee goli or esa khana tayyar ho raha hai jo in ko to kya in sub ki Jarh ukharh dey ga.

Jo Taghoot ka Pujari ho,
Mandar (Parliament) ka Rakhwala ho

Shetanon ka Sipahi or wafadar Kutta ho, or phir bhi Musalman? Ye kahan ki mantaq or reason he?

Kya Taghoot ki ebadat ne itna andha ker diya hai, ke common sense se bhi hath dho bethe ho?

Aqal karo or sambhal jau. Werna Jub Niyaam torh diye jayen gey, to phir tum maafi mango gey magar bohat der ho chukee ho gee.

Us wakht tumhara Diesel Mulla, Tahir ul Padri or Taghooti Professor tumhe nahi bacha paye ga..

Kyun ke un ka elaj tum se pehle ho chuka ho ga.

Salaam he sirf un pe jo Hidaayat ko qabool ker leyn.

baloch taleban said...

yar khda ke le balochistan ke msale par bloch qum ki husla afzaee karo

baloch taleban said...

yar balchistan le muslmanon ko husla afzei ki zrort he or facebook par bolchtleban ke nam se aap ki mada che he

تبصرہ کریں

آپ کے مفید مشوروں اور تجاویز کی ضرورت ہے
آپ اپنی شکایات سے بھی آگاہ کر سکتے ہیں
بحثوں میں مخالفت بھی کر سکتے ہیں لیکن حدود و قیود کے ساتھ
جزاک اللہ